افغانستان میں امریکی موجودگی سے سکیورٹی مسائل میں اضافہ ہوا: ایران

افغانستان میں امریکی موجودگی سے سکیورٹی مسائل میں اضافہ ہوا: ایرانمقدس دفاع نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق، اسلامی جمہوریہ ایران کی خارجہ تعلقات کی اسٹریٹیجک کونسل کے سربراہ کمال خرازی نے پیرس میں ایرانی سفارتخانے میں افغانستان اور شام کے امور میں اقوام متحدہ کے خصوصی ایلچی اخضر ابراہیمی سے ملاقات کی اور مغربی ایشیا کی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا۔

ہونے والی ملاقات کے موقع پر کمال خرازی نے افغانستان میں دہشتگرد گروہ داعش کی سرگرمیوں کی جانب اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ امریکہ  کی جانب سےافغانستان میں داعش کیلئے فضا سازگار بنائے جانے کے بعد سے اس ملک کے مسائل و مشکلات میں اضافہ ہوا ہے۔

ایران کی خارجہ تعلقات کی اسٹریٹیجک کونسل کے سربراہ نے اخضر ابراہیمی کی جانب سے عراق میں شیعہ اور سنی مسلمانوں کے مابین اختلافات سے متعلق تشویش کے جواب میں کہا کہ افسوس کے ساتھ کہنا پڑتا ہے کہ خلیج فارس کے بعض عرب ملکوں کی جانب سے عراق اور شام میں دہشتگرد گروہوں کی  امداد کی وجہ سے عراقی عوام اختلافات کا شکار ہوئے لیکن اس کے باوجود مراجع عظام کی درایت اور عراقی حکام اور عوامی گروہوں کی ہوشیاری کی وجہ سے عراق کے شیعہ اور سنی مسلمان ایک دوسرے کے بہت قریب آ گئے ہیں۔

اس ملاقات میں اخضر ابراہیمی  نے جو اقوام متحدہ کے سابق ارکان کی کونسل کے رکن بھی ہیں کہا کہ اس کونسل کے ارکان مشرق وسطی کی صورتحال اور فلسطین کے مسئلے کو سرد خانے میں ڈالے جانے کی وجہ سے تشویش میں مبتلا ہیں۔

پیغام کا اختتام/