اپ ڈیٹ: 05 July 2022 - 18:47
علمائے بحرین نے آل خلیفہ حکومت کی نمائشی عدالت کے فیصلوں کو دین اسلام اور عدل و انصاف کے بنیادی اصولوں کے منافی قرار دیا ہے۔
خبر کا کوڈ: ۵۳۹
تاریخ اشاعت: 23:16 - February 28, 2018

بحرین کی نمائشی عدالت کے ظالمانہ فیصلوں کی مذمتمقدس دفاع نیوز ایجنسی کی بین الاقوامی رپورٹر رپورٹ کے مطابق منامہ سے موصولہ رپورٹ کے مطابق علمائے بحرین نے ایک بیان جاری کر کے اعلان کیا ہے کہ آل خلیفہ حکومت کی نمائشی عدالت نے حکومت مخالفین کے خلاف جو فیصلے صادر کئے ہیں، وہ لوگوں کی جان اور عزت و ناموس کے تعلق سے دین اسلام کے بنیادی ترین اصولوں کو پامال کئے جانے کے مترادف ہیں۔

علمائے بحرین نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ ایذا رسانی کے ذریعے لئے گئے اعترافی بیان کی بنیاد پر سزائے موت دینے، شہریت سلب کرنے، خواتین کو جیلوں میں بند کرنے اور آل خلیفہ حکومت کی نمائشی عدالت کے دیگر ظالمانہ فیصلے عدل و انصاف کے بنیادی اصولوں پر بھی پورے نہیں اترتے۔

 یاد رہے کہ بحرین کی اپیل کورٹ نے منگل کے روز ملک کے مزید دو انقلابی نوجوانوں کی سزائے موت کی توثیق کر دی۔ ان نوجوانوں پر ایک پولیس اہلکار کے قتل میں ملوث ہونے کے جھوٹے الزام کے تحت مقدمہ چلایا گیا تھا۔

بحرین کی نمائشی عدالت نے اسی طرح دو دیگر بحرینی نوجوانوں کو عمر قید اور پانچ نوجوانوں کو تین سے سات سال تک قید کی سزائیں سنائی ہیں۔  

پیغام کا اختتام/ 

آپ کا تبصرہ
نام:
ایمیل:
* رایے:
مقبول خبریں