اپ ڈیٹ: 11 November 2019 - 13:28
اسلامی مزاحمتی تحریک حماس نے سعودی وزیر خارجہ کے بیان کی شدید مذمت کی ہے۔
خبر کا کوڈ: ۴۷۶
تاریخ اشاعت: 21:59 - February 25, 2018

سعودی وزیر خارجہ کے بیان کی حماس کی جانب سے مذمتمقدس دفاع نیوز ایجنسی کی بین الاقوامی رپورٹر رپورٹ کے مطابق سعودی وزیر خارجہ عادل الجبیر نے جمعرات کو یورپی پارلمان میں اپنی تقریر کے دوران فلسطین کی اسلامی مزاحمتی تحریک حماس کو انتہا پسند گروہ قرار دیا تھا۔

فلسطینی ذرائع کے مطابق حماس نے سنیچر کو ایک بیان جاری کر کے اعلان کیا ہے کہ سعودی وزیر خارجہ نے حماس کو انتہا پسند گروہ قرار دے کر فلسطینی عوام کی قانونی مزاحمت کی شبیہ بگاڑ کر پیش کرنے اور عالمی رائے عامہ کو دھوکہ دینے کی کوشش کی ہے۔

حماس نے اعلان کیا ہے کہ سعودی وزیر خارجہ کا یہ بیان  فلسطینی عوام اور تحریک مزاحمت کے رہنماؤں کے خلاف وحشیانہ اقدامات میں غاصب صیہونی حکومت کی حوصلہ افزائی کے مترادف ہے۔

 قابل ذکر ہے کہ سعودی وزیر خارجہ عادل الجبیر نے فلسطین کی  اسلامی مزاحمتی تحریک حماس کے خلاف ایسی حالت میں بیان دیا ہے کہ بحرین اور متحدہ عرب امارات کی حکومتوں کی طرح سعودی عرب بھی غاصب صیہونی حکومت کے ساتھ روابط کی بحالی کی کوشش کر رہا ہے۔ 

سعودی عرب، متحدہ عرب امارات اور بحرین کی حکومتیں غاصب صیہونی حکومت کے ساتھ ایسے عالم میں روابط بحال کرنے کی کوشش کررہی ہیں کہ انیس سو سڑسٹھ سے دو ہزار سترہ تک غاصب صیہونی حکومت، بیالیس ہزار فلسطینیوں کو شہید، دسیوں ہزار دیگر کو زخمی اور لاکھوں کو بے گھر کر چکی ہے۔ 

پیغام کا اختتام/ 

آپ کا تبصرہ
نام:
ایمیل:
* رایے: