اپ ڈیٹ: 22 April 2021 - 17:12
ہندوستان کے زیر انتظام کشمیر میں انجمن شرعی شیعیان کے صدر نے پاکستان کے صوبہ بلوچستان کے علاقہ مچھ میں 11 شیعہ محنت کشوں کے بہیمانہ قتل کی شدید مذمت کرتے ہوئے متاثرہ خاندانوں کے ساتھ ہمدردی اور تعزیت کا اظہار کیا ہے۔
خبر کا کوڈ: ۴۱۰۴
تاریخ اشاعت: 1:50 - January 08, 2021

انجمن شرعی شیعیان کی طرف سے کوئٹہ کے شیعہ محنت کشوں کے بہیمانہ قتل کی مذمتمقدس دفاع نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق ہندوستان کے زیر انتظام کشمیر میں انجمن شرعی شیعیان کے صدر حجۃ الاسلام والمسلمین آغا سید حسن موسوی نے پاکستان کے صوبہ بلوچستان کے علاقہ مچھ میں 11 شیعہ محنت کشوں کے بہیمانہ اور ظالمانہ قتل کی شدید مذمت کرتے ہوئے متاثرہ خاندانوں کے ساتھ ہمدردی ، تعزیت اور یکجہتی کا اظہار کیا ہے۔ انھوں نے کہا کہ پاکستان میں ہزارہ برادری کو ظلم و بربریت کا سامنا رہا ہے اور ہزارہ شیعہ برادری نے اب تک ہزاروں جنازے اٹھائے ہیں۔ آغا سید حسن موسوی نے کہا کہ اگر شیعہ ہزارہ برادری کے قتل میں ملوث دہشت گردوں کو اگر اس سے قبل سزا دی جاتی تو آج یہ المناک سانحہ وجود میں نہ آتا۔ ہزارہ برادری کو تحفظ فراہم کرنا پاکستانی حکومت کی ذمہ داری ہے اور دہشت گردوں کو کیفر کردار تک پہنچانا پاکستانی حکومت اور پاکستانی عدلیہ کے فرائض میں شامل ہے۔ آغا سید حسن نے کہا کہ وہابی دہشت گرد پاکستان کی قومی اور ارضی سالمیت کے لئے بہت بڑا خطرہ ہیں اور پاکستانی حکومت کو اس بات پر توجہ دینی چاہیے۔ انھوں نے کہا کہ انجمن شرعی شعیان جموں و کشمیر ہزارہ برادری کے ستمدیدہ مظلوموں کے غم میں برابر کی شریک ہے ۔ اور ہم وہابی تکفیری دہشت گردوں کے اس سفاکانہ اور مجرمانہ عمل کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہیں۔ انھوں نے کہا کہ وہابی تکفیری دہشت گردوں کو امریکہ، اسرائیل اور سعودی عرب کی بھر پور حمایت حاصل ہے۔

آپ کا تبصرہ
نام:
ایمیل:
* رایے:
مقبول خبریں