اپ ڈیٹ: 11 November 2019 - 13:28
عراق کے وزیر خارجہ ابراہیم الجعفری نے جمعے کی رات اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے بہتر ویں اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے عراق میں ایرانی فوجیوں کی موجودگی سے متعلق اسرائیلی وزیر اعظم نتن یاہو کے بیان کو جھوٹ کا پلندہ قرار دیا ہے۔
خبر کا کوڈ: ۲۶۵۳
تاریخ اشاعت: 19:25 - September 29, 2018

اسرائیلی وزیر اعظم کا بیان جھوٹ کا پلندہ ہے، عراقی وزیر خارجہمقدس دفاع نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق، عراق کے وزیر خارجہ ابراہیم جعفری نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے مسئلہ فلسطین کی جانب بھی اشارہ کیا اور کہا کہ عراق، فلسطین کے بارے میں اپنی  آزاد پالیسی پر کاربند ہے اور مقبوضہ سرزمین سے اسرائیلی فوجیوں کے انخلا سے ہی امن قائم ہو سکتا ہے۔

عراق کے وزیر خارجہ نے ایک بار پھر امریکہ کی جانب سے مقبوضہ بیت المقدس کو اسرائیلی دارالحکومت کے طور پر تسلیم کرنے کے فیصلے کی مخالفت کی۔

ابراہیم جعفری نے عراق کے شمالی علاقے بعشیقه میں ترکی کی فوجی موجودگی پر سخت رد عمل دکھاتے ہوئے کہا کہ بغداد  اپنی سرزمین پر انقرہ کی جارحیت کی مذمت کرتا ہے۔

عراق کے وزیر خارجہ نے  عراقی علاقوں کو داعش دہشت گرد گروہ کے قبضے سے آزاد کرانے کی جانب اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ ہم ان کو کبھی  فراموش نہیں کریں گے کہ جنہوں نے دہشت گرد گروہوں کے خلاف ہمارے ساتھ تعاون کیا ہے۔

پیغام کا اختتام/

آپ کا تبصرہ
نام:
ایمیل:
* رایے:
مقبول خبریں