اپ ڈیٹ: 11 November 2019 - 13:28
ایران کے نائب صدر اسحاق جہانگیری نے کہا ہے کہ امریکی وزارت خزانہ ایران کے خلاف اقتصادی جنگ کے کنٹرول روم میں تبدیل ہو گئی ہے۔
خبر کا کوڈ: ۱۸۰۹
تاریخ اشاعت: 23:09 - July 10, 2018

امریکی وزارت خزانہ ایران کے خلاف اقتصادی جنگ کا کنٹرول روممقدس دفاع نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق، اسلامی جمہوریہ ایران کے نائـب صدر اسحاق جہانگیری نے اصفہان میں اسٹیل کے توسیعی منصوبے کی افتتاحی تقریب سے اپنے خطاب میں کہا کہ امریکہ کا ایک بڑا مقصد ایران کے اقتصاد و معیشت کو نقصان پہنچانا ہے - انہوں نے کہا کہ اس اسٹریٹیجی کے تحت امریکہ نے اسرائیل اور سعودی عرب کے ساتھ  ہم آہنگی کی ہے تاکہ مختلف طریقوں سے ایران پر دباؤ ڈالا جا سکے۔

ایران کے نائب صدر نے کہا کہ امریکہ نے چین کے ساتھ بھی تجارتی جنگ شروع کر رکھی ہے اور وہ کئی بین الاقوامی معاہدوں سے نکل گیا ہے  اور اس وقت وہ اپنی ایک خاص پالیسی کو آگے بڑھانے کی کوشش کر رہا ہے۔ایران کے نائب صدر اسحاق جہانگیری نے اس بات کا ذکر کرتے ہوئے کہ امریکہ ایران کی آمدنی کے اہم ترین ذریعے کی حیثیت سے تیل کی برآمدات کو نومبر تک زیرو پر پہنچانے کی کوشش کر رہا ہے، کہا کہ اس کا یہ دعوی بالکل مضحکہ خیز ہے اس لئے کہ اس کا یہ دعوی، اسی صورت میں پورا ہو سکتا ہے کہ تمام ممالک امریکہ کے سامنے سرتسلیم خم کردیں اور وہ خود کو واشنگٹن کے سامنے کچھ نہ سمجھیں۔

پیغام کا اختتام/
آپ کا تبصرہ
نام:
ایمیل:
* رایے:
مقبول خبریں