اپ ڈیٹ: 26 January 2021 - 02:23
پاکستان کی فوج نے اعلان کیا ہے کہ دہشت گردوں کو کنٹرول کرنے کی غرض سے افغانستان سے ملنے والی پاکستان کی سرحدوں پر مزید ستر کلومیٹر پر باڑ لگا دی گئی ہے۔
خبر کا کوڈ: ۱۳۶۲
تاریخ اشاعت: 20:47 - May 05, 2018

پاک افغان سرحد پر باڑ لگانے کا عملمقدس دفاع نیوز ایجنسی کی بین الاقوامی رپورٹر رپورٹ کے مطابق، پاکستانی فوج کے ترجمان  میجر جنرل آصف غفور نے کہا ہے کہ دہشت گردوں کو کنٹرول کرنے کی غرض سے افغانستان سے ملنے والی مشترکہ سرحدوں پر باڑ لگانے کا عمل جاری ہے۔

پاک فوج کے ترجمان کے مطابق یہ باڑ صوبے خیبر پختونخوا کے قبائلی علاقے شمالی وزیرستان میں لگائی گئی ہے جبکہ یہ باڑ دو ہزار تین سو کلو میٹر طویل مشترکہ سرحدوں پر لگائی جائے گی تاکہ دہشت گرد پاکستان کے علاقوں میں داخل نہ ہوسکیں اور  بدامنی نہ پھیلا سکیں۔

پاکستان، افغانستان سے ملنے والی مشترکہ سرحدوں پر نگرانی کے لئے چیک پوسٹوں کی تعداد بڑھا کر سات سو پچاس تک کرنے کا ارادہ رکھتا ہے۔

پاکستان کی جانب سے سرحدوں پر یہ باڑ ایسی حالت میں لگائی جا رہی ہے کہ ڈیورنڈ لائن پر باڑ لگانے پر افغانستان کی حکومت پہلے ہی پاکستان کو خبردار کر چکی ہے۔واضح رہے کہ ڈیورنڈ لائن کے بارے میں پاکستان اور افغانستان کے درمیان اختلافات پائے جاتے ہیں۔

پیغام کا اختتام/
آپ کا تبصرہ
نام:
ایمیل:
* رایے:
مقبول خبریں