اپ ڈیٹ: 11 November 2019 - 13:28
جرمن میڈیا کا کہنا ہے کہ کیمیائی حملہ شام کی فوج نے نہیں بلکہ جنگجوؤں نے کیا تھا۔
خبر کا کوڈ: ۱۳۰۳
تاریخ اشاعت: 8:26 - April 25, 2018

شام میں دہشتگردوں نے کیا کیمیائی حملہ، جرمن میڈیامقدس دفاع نیوز ایجنسی کی بین الاقوامی رپورٹر رپورٹ کے مطابق، جرمن میڈیا کا کہنا ہے کہ شام میں کیمیائی حملے کے لئے جنگجوؤں نے منصوبہ بنایا تھا جبکہ شامی فوج کی جانب سے کوئی کیمیائی حملہ نہیں کیا گیا تھا۔

ایک جرمن ٹی وی کے صحافی نے متاثرہ علاقے دوما کا دورہ کیا اور دمشق میں قائم کیمپوں میں مقیم مقامی افراد سے جب اس بارے میں پوچھا تو ان کا کہنا تھا کہ شامی فوج کی جانب سے کسی قسم کا کوئی کیمیائی حملہ نہیں ہوا، یہ سب جنگجوؤں کا ڈرامہ تھا۔

انہوں نے دوما میں اپنی ایک کمانڈ پوسٹ پر کلورین گیس سے بھرے کنستر لا کر رکھے تھے اور پھر انہوں نے انتظار کیا کہ جب شامی فوج اس جگہ پر بمباری کرے گی اور پھر جب شامی فوج نے جنگجوؤں کو نشانہ بنانے کے لیے بمباری کی تو کلورین سے بھرے کنستر پھٹنے سے علاقے میں گیس پھیلی اور درجنوں ہلاک اور سیکڑوں بری طرح متاثر ہوئے۔

واضح رہے کہ امریکہ، فرانس اور برطانیہ سمیت دوسرے ممالک یہ الزام لگاتے رہے کہ بشار الاسد نے دوما میں کیمیائی گیس کا استعمال کیا اور لوگوں کا قتل عام کیا اور اسی بے بنیاد اور من گھڑت دعوے کی بنیاد پر دو ہفتے قبل امریکہ، فرانس اور برطانیہ نے شام پر حملہ کیا اور ایک سو سے زائد میزائل داغے۔

پیغام کا اختتام/

آپ کا تبصرہ
نام:
ایمیل:
* رایے:
مقبول خبریں