اپ ڈیٹ: 11 November 2019 - 13:28
ترک صدرطیب اردوغان اور روسی صدر پوتین کا ٹیلیفونک رابطہ ہوا ہے جس میں دونوں رہنماؤں نے شام کی تازہ ترین صورتحال پر تبادلہ خیال کیا ہے۔
خبر کا کوڈ: ۱۱۸۰
تاریخ اشاعت: 23:37 - April 13, 2018

شام کی صورتحال روس اور ترکی کا ٹیلفونک رابطہمقدس دفاع نیوز ایجنسی کی بین الاقوامی رپورٹر رپورٹ کے مطابق، روس اور ترکی کے صدور نے شام کی تازہ ترین صورتحال اور امریکی دھمکیوں پر تبادلہ خیال کیا ہے۔

واضح رہے کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے ایک بار پھر خبردار کیا ہے کہ شام پر حملہ بہت جلد بھی ہو سکتا ہے اور اس میں تاخیر بھی ہو سکتی ہے۔

گزشتہ روز روسی سفیر کے بیان پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے ڈونلڈ ٹرمپ نے ماسکو کو خبردار کیا تھا کہ وہ شام میں امریکی میزائل حملوں کے لیے تیار رہے کیونکہ ہمارے جدید، عمدہ اور اسمارٹ میزائیل راستے میں ہیں ۔

روس نے امریکی دھمکیوں پر رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ امریکی جارحیت کا منہ توڑ جواب دیا جائے گا۔

جس کے بعد امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے اپنےموفق سے پسپائی اختیار کرتے ہوئے کہا کہ شام پر حملے میں تاخیر ہو سکتی ہے۔

پیغام کا اختتام/ 

ٹیگس: شام ، ترک ، روسی ، امریکی ، ٹرمپ
آپ کا تبصرہ
نام:
ایمیل:
* رایے:
مقبول خبریں