اپ ڈیٹ: 11 November 2019 - 13:28
یمن کی مستعفی حکومت کے وزیر داخلہ نے اعلان کیا ہے کہ متحدہ عرب امارات منصور ہادی کی عدن واپسی میں رکاوٹ ڈال رہا ہے۔
خبر کا کوڈ: ۱۰۸۰
تاریخ اشاعت: 0:00 - April 08, 2018

منصور ہادی کی عدن واپسی میں متحدہ عرب امارات کی رکاوٹمقدس دفاع نیوز ایجنسی کی بین الاقوامی رپورٹر رپورٹ کے مطابق، یمن کی مستعفی حکومت کے وزیر داخلہ احمد المیسری نے، جو ریاض میں رہائش پذیر ہیں، فرانسیسی ذرائع ابلاغ سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ یمن کے مستعفی صدر منصور ہادی اور متحدہ عرب امارات کے حکام کے درمیان اختلافات اس حد تک بڑھ گئے ہیں کہ متحدہ عرب امارات منصور ہادی کی عدن واپسی کو ناقابل قبول سمجھتا ہے۔

المیسری نے کہا کہ عدن میں دہشت گردی کے خلاف جو حربے سعودی اتحاد کی کارروائی کے دائرے میں استعمال کئے جا رہے ہیں، وہ درست نہیں ہیں۔

اس سے قبل مارچ میں یمن کے وزیر مملکت صلاح الصیادی نے تاکید کے ساتھ کہا تھا کہ منصور ہادی زبردستی ریاض میں رکے ہوئے ہیں۔

جنوبی یمن کے حالات سے پتہ چلتا ہے کہ یمن میں اثرورسوخ پیدا کرنے کے سلسلے میں سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات کے درمیان دوڑ شدّت اختیار کرتی جا رہی ہے اور ان میں ہر کوئی دوسرے کو شکست دینے کی کوشش کر رہا ہے۔

پیغام کا اختتام/ 

آپ کا تبصرہ
نام:
ایمیل:
* رایے:
مقبول خبریں