اپ ڈیٹ: 11 November 2019 - 13:28
اقوام متحدہ میں اسلامی جمہوریہ ایران کے مستقل مندوب نے کہا ہے کہ جوہری معاہدے کو کمزورکرنے کی کوششوں کی روک تھام عالمی برادری اور جوہری معاہدے پر دستخط کرنے والے ممالک کی ذمہ داری ہے۔
خبر کا کوڈ: ۱۰۰۶
تاریخ اشاعت: 22:43 - April 03, 2018

جوہری معاہدے کو کمزورکرنے کی کوششوں کی روک تھام، عالمی برادری کی ذمہ داریمقدس دفاع نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق، اقوام متحدہ میں اسلامی جمہوریہ ایران کے مستقل مندوب غلام علی خوشرو نے نیو یارک میں تخفیف اسلحہ کمیشن 2018 کے اجلاس میں اس جانب اشارہ کرتے ہوئے کہ جوہری توانائی کےڈائریکٹر جنرل نے اپنی 10 رپورٹوں میں اس بات کی تا‏ئید کی ہے کہ ایران نے جوہری معاہدے پر مکمل عمل کیا ہے کہا کہ یہ معاہدے یکطرفہ نہیں ہے لہذا معاہدے کے تمام فریقوں کو اس پر عمل در آمد کرنا چاہئیے۔

ایران کے مستقل مندوب  نے  جوہری معاہدے  کے حوالے سے امریکہ کی غیر ذمہ دارانہ اور غلط پالیسی کو واشنگٹن کی جانب سے وعدہ خلافی قرار دیتے ہوئے عالمی برادری سے مطالبہ کیا کہ وہ امریکہ کو جوہری معاہدے کو کمزور کرنے کی اجازت نہ دے۔

غلام علی خوشرو نے تخفیف اسلحہ کے حوالے سے دوہرے معیار کی پالیسی یعنی بعض ممالک کی جانب سے ہتھیاروں کی دوڑ اور نئے ہتھیاروں کی تعمیر کو عالمی امن و صلح کے لئے خطرناک قرار دیتے ہوئے اس قسم کی پالیسی کی روک تھام کا مطالبہ کیا۔

نیو یارک میں تخفیف اسلحہ سے متعلق سالانہ اجلاس 3 روز تک جاری رہے گا۔

پیغام کا اختتام/ 

آپ کا تبصرہ
نام:
ایمیل:
* رایے:
مقبول خبریں