اپ ڈیٹ: 10 July 2019 - 08:54
ایران کی اعلی قومی سلامتی کونسل کے سیکریٹری علی شمخانی نے کہاہے کہ سانحہ زاہدان میں ملوث عناصر سے انتقام لیا جائے گا
خبر کا کوڈ: ۳۷۱۷
تاریخ اشاعت: 10:36 - March 04, 2019

زاہدان دہشت گردانہ حملے کے ذمہ داروں سے اتنقام لینے پر تاکیدمقدس دفاع نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق، تیرہ فروری کو زاہدان، خاش ہائی وے پر دہشت گردوں نے سپاہ پاسداران انقلاب اسلامی کے جوانوں کی بس کو کار بم دھماکے کے ذریعے دہشت گردانہ حملے کا نشانہ بنایا تھا جس کے نتیجے میں ستائیس اہلکار شہید اور تیرہ دیگر زخمی ہو گئے تھے-

خود کو جیش العدل کہلانے والے ایک دہشت گرد گروہ جیش الظلم نے اس سفاکانہ کارروائی کی ذمہ داری قبول کی ہے جس کی امریکہ اور سعودی عرب کی جانب سے بھرپور پشت پناہی کی جا رہی ہے۔

تہران میں صحافیوں سے غیر رسمی بات چیت کرتے ہوئے ایران کی اعلی قومی سلامتی کونسل کے سیکریٹری علی شمخانی نے کہا کہ سانحہ زاہدان میں ملوث عناصر سے انتقام لیا جائے گا جبکہ حکومت پاکستان نے انقلاب دشمن عناصر کو ایران میں داخل ہونے سے روکنے کے لئےاپنی سرحدی سیکورٹی کو یقینی بنانے کا وعدہ کیا ہے - انہوں نے کہا کہ حکومت پاکستان نے وعدہ کیا ہے کہ وہ اپنی سرحدوں سے انقلاب دشمن عناصر کی دراندازی کے خاتمے کو یقینی بنائے گی۔

ایران کی اعلی قومی سلامتی کونسل کے سیکریٹری نے شام میں ایران کے فوجی مشاورتی مشن کے بارے میں کہا کہ ایران نے شامی حکومت کی درخواست پر اپنا مشاورتی مشن دمشق روانہ کیا ہے۔

علی شمخانی نے واضح کیا کہ اسلامی جمہوریہ ایران، شام کی قانونی حکومت کی دعوت اور شامی عوام کی مدد کے لیے وہاں موجود ہے اور جب تک شامی حکومت چاہے گی ایران کا فوجی مشاورتی مشن وہاں موجود رہے گا۔

پیغام کا اختتام/

 
 
آپ کا تبصرہ
نام:
ایمیل:
* رایے:
مقبول خبریں