اپ ڈیٹ: 10 July 2019 - 08:54
ایٹمی توانائی کے عالمی ادارے کے سربراہ یوکیا امانو نے ایک بار پھر کہا ہے کہ ایران نے جامع ایٹمی معاہدے کے تحت اپنی ذمہ داریوں کو پورا کیا ہے اور وہ اب بھی اس معاہدے کی پاسداری کر رہا ہے۔
خبر کا کوڈ: ۲۵۰۱
تاریخ اشاعت: 19:51 - September 17, 2018

ایران نے ایمی معاہدے پر عمل کیا ہے، سربراہ آئی اے ای اےمقدس دفاع نیوز ایجنسی کی بین الاقوامی رپورٹر رپورٹ کے مطابق، آئی اے ای اے کی جنرل اسمبلی کے باسٹھویں اجلاس کے افتتاحتی سیشن سے خطاب کرتے ہوئے سیکریٹری جنرل یوکیا امانو نے بڑی واضح الفاظ میں کہا کہ ایران ایٹمی معاہدے کے ساتھ کیے گئے اپنے تمام وعدے پورے کر دیئے ہیں۔

یوکیا آمانو نے کہا کہ سیف گارڈ معاہدے کے مطابق ایران کی ایٹمی تنصیبات کی معائنہ کاری اور عدم انحراف کی جانچ پڑتال کا کام آئندہ بھی جاری رہے گا۔

واضح رہے کہ ایٹمی توانائی کے عالمی ادارے آئی اے ای اے نے تیس اگست کو پیش کی جانے والی رپورٹ میں بھی اس بات کی تصدیق کی تھی کہ ایران ایٹمی معاہدے کی پوری طرح پابندی کر رہا ہے۔

یہ ایٹمی معاہدے پر علمدر آمد کے آغاز کے بعد سے بارہویں اور ایٹمی معاہدے سے امریکہ کی علیحدگی کے بعد پیش کی جانے والے دوسری رپورٹ تھی۔

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے آٹھ مئی دو ہزار اٹھارہ کو ایران کے ساتھ ہونے والے ایٹمی معاہدے سے یک طرفہ علیحدگی کا اعلان کر دیا جس پر معاہدے کے باقی ماندہ فریقوں نے شدید ردعمل کا اظہار کیا ہے۔

پیغام کا اختتام/

آپ کا تبصرہ
نام:
ایمیل:
* رایے:
مقبول خبریں