اپ ڈیٹ: 10 July 2019 - 08:54
پاکستان کے وزیر دفاع خرم دستگیر نے کہا ہے کہ امریکہ نے پاکستان کو کسی قسم کی امداد نہیں دی ڈونلڈ ٹرمپ کو 33 ارب ڈالر امداد کی ایک ایک پائی کا حساب دیں گے اور امریکہ کو افغان جنگ پاکستان میں لڑنے کی اجازت نہیں دیں گے۔
خبر کا کوڈ: ۲۳
تاریخ اشاعت: 17:29 - January 02, 2018

امریکہ کو افغان جنگ پاکستان میں لڑنے کی اجازت نہیں دیں گےمقدس دفاع نیوز ایجنسی کی بین الاقوامی رپورٹر کے مطابق ایکسپریس نیوز کے پروگرام ’کل تک‘‘ میں میزبان جاوید چوہدری سے ٹیلی فونک گفتگو میں وزیر دفاع نے کہا کہ افغانستان کے امن کے لیے پاکستان میں جنگ کرنا کسی صورت سود مند نہیں امریکا کو افغانستان کی جنگ پاکستان میں لڑنے نہیں دیں گے ہم پاک سرزمین کے دفاع کے لیے بالکل تیارہیں۔

وزیر دفاع نے کہا کہ افغانستان سے حملوں میں پاک فوج کے جوان اور شہری شہید ہوئے، افغانستان میں بھی محفوظ پناہ گاہیں ہیں جہاں سے پاکستان میں حملے ہورہے ہیں، اگر ایک ٹوئٹ سے معاملات حل ہوتے تو کب کے حل ہوجاتے، پاکستان سے القاعدہ ختم کرنے کی کوئی اور مثال نہیں ملتی۔

خرم دستگیرنے مزید کہا کہ دہشت گردوں کی کچھ باقیات ہیں جو آپریشن ردالفساد کے ذریعے ختم کررہے ہیں، فی الوقت پاکستان میں دہشت گردوں کی کوئی محفوظ پناہ گاہ نہیں ہے۔

دریں اثنا دفتر خارجہ نے ٹرمپ کے بیان پر امریکی سفیر ڈیوڈ ہیل کو طلب کرکے اپنا سخت احتجاج ریکارڈ کرایا ہے، ڈونلڈ ٹرمپ نے اپنے بیان میں کہا تھا کہ پاکستان امریکی رہنماؤں کو بے وقوف سمجھتا ہے، پاکستان کو 15 برس میں 33 ارب ڈالر کی امداد دے کر امریکا نے بے وقوفی کی۔

پیغام کا اختتام/

آپ کا تبصرہ
نام:
ایمیل:
* رایے:
مقبول خبریں